Punjabi Wichaar
کلاسک
وچار پڑھن لئی فونٹ ڈاؤن لوڈ کرو Preview Chanel
    



مُڈھلا ورقہ >> دُھکھدا جنگل >> کوئی دستار رت لِبڑی ۔۔۔

کوئی دستار رت لِبڑی ۔۔۔

سرجیت پاتر
March 23rd, 2008

کوئی دستار رت لِبڑی' کوئی تلوار آئی ہے
لیاؤ سردلاں توں چک کے' اخبار آئی ہے
گھراں دی اگ سیانی اے، تدے ایس دی لپیٹ اندر
بگانی دھی ہی آئی ہے کہ جنی وار آئی ہے
لگائی سی جو تیلاں نال، بجھائی نہ اپیلاں نال
نہیں مڑ دی دلیلاں نال اگن جو دوار آئی ہے
اے میرے شہر دے لوکو' بہت خوش ہے تہاڈے تے
تہاڈے شہر ول گِرجھاں دی ' ایہہ ڈار جو آئی ہے
اسیں بیجے' تُساں بیجے' کسے بیجے چلو چھڈو
کرو جھولی، بھرو انگیار لؤ کہ بہار آئی ہے
ندی اینی چڑھی کہ ، نیر دہلیزاں تے چڑھ آیا
بدی اینی ودھی کہ ' آپنے وِچکار آئی ہے
کوئی کونپل نویں پھُٹی ' کہ کوئی ڈال ہے ٹٹی
کہ آئی جان وچ مُٹھی، کسے دی تار آئی ہے

 


Share |


 

Depacco.com


 

 

Support Wichaar

Subscribe to our mailing list
نجم حسین سیّد
پروفیسر سعید بُھٹا
ناول
کہانیاں
زبان

 

Site Best Viewd at 1024x768 Pixels