Punjabi Wichaar
کلاسک
وچار پڑھن لئی فونٹ ڈاؤن لوڈ کرو Preview Chanel
    


مُڈھلا ورقہ >> شاہ مُکھی وچار >> کلاسک >> نانک بانی >> کلام نانک >> کلام نانک 1

کلام نانک 1

گرو نانک
September 14th, 2008
5 / 5 (3 Votes)

اِک اُونکا سَتِ (2) نامُ کرتا پُرکھُ (3) نِر بھو (4) نِروَیرَ
اَکال (6) مُورتِ اجُونی (7) سَے (8) بھَنگ گرُ پرسَاد (9)

جپُ (10)

آد (11) سَچُ جگادِسَچُ ہے بھی سچُ
نانک ہوسی بھی سَچُ۔ 1
سوچُے (12) سوچ نَ ہوئی جے سوچی لکھ وار       چپَے جُپ نَ ہوولی جے لاءِ رہا لِوتار (13)
بھُکیا بھُکھ نَ اُتری جے بنا پریا بھار (14)            سَسَ سیانپا (15) لکھ ہووَت اِک نَ چَلے نال
کَو (16) سچیّارا (17) ہوئی اے کَو کوڑے تُٹے پال (18)         حَکم رَجائی چلنا نانک لِکھیا (19) نالِ ۔ 1
حُکمی ہوونِ آکار (20) حکم نَ کہیا جائی        حُکمی ہوون جئیہ (21) حکم ملےَ وڈیائی
حُکمی اتم (22) نیچ حکم لِکھ دُکھ سکھ پائی ہ          اک نُا حکمی بکھسَیِس(23) اِک حُکمی سَدا بھوائی اہ (24)
حُکمے اندر سبھ کو باہرِ حُکم نَ کوءِ          نانک حکمے جے بجھے ت ہو (25) مَے کہے نَََََ کوءِ ۔ =2
گاوے کو تان (26) ہووے کسّے تانُ         گاوے کو دات جانے نی سان (27)
گاوے کو گنُ وڈِ آئی آچار (28)            گاوَے کو وِدیا وِکھم (29) وِی چار (30)

گاوے کو ساجِ (31) کرے تن کھہہ (32)         گاوے کو جئیہ لے (33) پِھر دیہہ
گاوے کو جاپے دسّے دُور         گاوے کو ویکھے حاورا (34) حدور
کتھنا کتھی نَ آوے توٹ (35)         کتھ کتھ کتھی کوٹی کوٹ (36) کوٹ
دیدا دے لیدے تھک پاہ        جگا جگنتر کھا ہی کھاہ
حکمی حکمَ چلائے راہُ          نانک وگسے (37) وے(38) پرواہ (39) ۔ =3
ساچا صاحب ساچ ناء (39)بھاکھیا (40) بھاؤ اپار            آ کھہہ منگہہ دیہہ دیہہ دات کرے دا تارُ
پھیر ک اگے رکھی اے ( 41) جتُ دسے           دربارُ مُوہوکِ بولنُ بولی اَے جِت سنُ دھرے پیارُ
اَنمرتِ ّ (42) ویلا سچُ ناء وڈ آئی وی چارَ           کرمی (43) آوے کپڑا (44) ندری (45) موکھ (46) وآر

نانک اے وے جانی اے سَبھُ آپے سچیّارُ ۔ =4

تھاپیا ( 47) نَ جاءِ کیتا (48) نِ ہوءِ          آپے آپ نرنجن (49) سوءِ
جن سیویا تن پایا مانُ           نانک گا وی اَے گنُی ندھانُ(50)
گاوی اے سُنی اے من رکھی اَے بھاؤ (51)         وُکھُ پر ہر (52) سُکھُ گھر لیے جاءِ
گر مکھ (53) ناد نگ گر مکھ وید نگ (54) گر مکھ رہیا سمائی            گر ایسر گرُ گورکھ برما (55) گر پار بتی مائی
جے ہَو جانا (56) آکھا ناہی کہنا کتھنَ نَ جائی         گرُا اِک دیہہ بجھائی

سَبھنا جئیہ کا اکَ داتا سومے وسر (57) ، نَ جائی ۔ =5
تیرتھ ناوا (58) جے تَس بھاوا (59) وِن بھانے ک ناءِ کری
جے تی سِرٹھ (60) اَپائی ویکھا وِن کرما ک ملَے لئی
مت وِچ رتن جواہر مانک جے اک گر کی سکھ سنی
گرا اِک دیہہ بجھائی


سبھنا جی آکا اِک داتا سویمے وسِر ۔ نَ جائی ۔ =6

جے جگ چارے آر جا (59) ہور وسونی (60) ہوءِ      نواں کھنڈا وچ جانی اے نال چلے سبھ کوءِِ
چنگا ناؤ رکھاءِ کے جس کی(61) کی رت جگِ لے ءِ           جے تسُ(62) ندر۔ نَ آوئی ت وات (63) نَ پچھے کے ءِ
کی ٹاں اندرِ کی ٹَ کردوسی دوس (65) دھرے            نانک نرگن گن کرے گن ونیتا گن دے ءِ

تے (66) ہاکوء نَ سجُھ (67) ئی جے تسِ گن کوءِ کرے ۔=7
سنی اے سدھ پیر سر (69) ناتھ         سُن اے دھرت دھ (70) ول اکاس
سُن اَے دیپ لوءِ پاتال           سن اَے پوہ (71) نَ سکے کال
نانک بھگتا سدا وگاس (72)           سن اَے دوکھ پاپ کا ناس ۔ =8
سَن اَے ای (73) سر برما اند         سن اے مُکھ صالاہن مند
سَن اے جوگ جگت تن بھید       سن اے ساست (75) سمرت وید
نانک بھگتا سدا وگاس          سن اے دوکھ پالپ کا ناس ۔ =9
سن اے ست سنتوکھ گیان         سن اے اٹھ (76) سٹھ کا اسنان
سن اے پڑ پڑ (77) پاوہ مان         سن اے لاگے سہج دھیان
نانک بھگتا سدا وگاس        سن اے دوکھ پاپ کا ناس۔ =10
سنَ اے سرا (78) گناہ کے گاہ      سن اے سیکھ (79) پیر پاتساہ
سنَ اے اندھے پا وہ راہ           سن اے (80) ہاتھ ہووے اس گاہ (81)
نانک بھگتا سَدا وگاس          سن اے دوکھ پاپ کا ناس ۔ =11
منے کی گت (82) کہی نَ جاءِ           جے کو کہے پچھے پچھتاءِ
کاگد (83) قلم نَ لکھن ہارُ (84)             منے کا بہ (85) کرن وی چار

اَے سا نامَ نرنجن ہوءِ              جے کو منِ جانے من کوءِ ۔ =12
مَنے سرت ہووے من بدھ        منَے سَگل (86) بھ ون کی سدھ
منے موہ (87) چوٹا (88) نا کھاءِ           منے جم ( 89) کے ساتھ نَ جاءِ
ایسا نام نرنجنُ ہوءِ            جے کو من جانَئے من کو۔ =13
منے مارگ (90) ٹھاک (91) نَ پاءِ         مَنے پت (92) سیئو پَرگٹ جاءِ
منے مگ (93) نَ چلے پنتھُ           (94) منے دھرم سے تی (95) سنبدھ
ایسا نام نرنجِن ہوءِ          جے کو منِ جانَے من کوء ۔ =14
مَنے پاوہِ موکھ دُآر          مَنے پَوارے (96) سادھارُ
منَے تَرَے تارے گر سکھ         منے نانک بھوہَ (97) نَ بھِکھ (98)
ایسا نام نرنجنَ ہوءِ           جے کو من جانَے من کوءِ۔ =15
پنچ پروان(99) پنچ پردھان (100)            پنچے پاوہ (101) درگہ مان
پنچے سوہہَہ (102) در راجان        پنچا کا گر اِک دھیانُ
جے کو کہَے کرے وی چار          کرتے کے کرَنے (103) ناہی (104) سُمارُ
دھولُ (105) دھرمُ دیا (106) کا پَوتُ          سنتوکھُ تھاپ رکھیا جن سوت (107)
جے کو بجھےُ (108) ہووَے سچیّار    (109) دھولے اُپر کے تا (110) بھار
دھرتی ہورُ پرَے ہورُ ہورُ        تِس تَے بھارُ تلے کون (111) جور
جئیہ۔ جات رنگا کے ناو          سَبھنا لکھیا وڑی (112) کلام
ایہُہ لیکھا لِکھ جانے کوءِ         لیکھا لکھیا۔ کے تا (113) ہوءِِ
کے تا تان (114) سیالہہ (115) روپ            کے تی دات (116) جانَے کونَ کوتُ (117)

کیتا پساؤ(118) ایکو کواؤ (119)        تِس تے ہوئے لکھ دریاؤ
کدُرتِ (120) کوَن کہا۔ وی چارُ (121)         وارِیا (122) نَ جاوا اک وار
جو تدُھُ بھاوے سائی بھلی کار            تو سُدا سلامت نر نکار۔ =16
اَسنکھ (123) جپ اَسنکھ بھاؤ           اَسنکھ پُوجا اسنکھ تپ تاؤ
اَسنکھ گرنتھ مُکھ وید پاٹھ          اسنکھ جوگ من رہہ اداس
اَسنکھ بھگت گنُ گیان وی چارُ         اسنکھ اسنکھ سَتی اسنکھ داتار
اَسنکھ سور (124) مہہ بھکھ سار (125)               اسنکھ مون (126) لاء (127) تار
کدُرتِ کوَن کہا وی چارُ            واریا نَ جاوا ایک وار
جو تُدھُ بھاوے سائی بھلی کار          تو سَدا سلامت نرنکار۔ =17
اسنکھ مُورکھ اَندھ (128) گھور           اَسنکھ چور حرام کھور (129)
اسنکھ امر (130) کر جاہ جور           اَسنکھ گل وڈھ (131) ہتیا کماہ
اَسنکھ پاپی پاپُ کر جاہِ           اَسنکھ کوڑیار (132) کوڑے پھراہِ
اَسنکھ ملیچھ (133) مُل بھکھِ (134)کھاہ         اَسنکھ نَندکَ سِر کرُہِ (135) بھارُ
نانک ینچُ کہے وی چارُ           واریا نَ جاوا ایک وارُ
جو تُدھُ بھاوے سائی بھلی کار           تو سدا سلامت نرنکار ۔ =18
اسنکھ ناو اَسنکھ تھاو (136)           اَگم (137) اَگم اسنکھ لوءِ (138)
اسنکھ کہنہ سِر بھارُ ہوئے           اکھری (139) نامُ اکھرَی صالاہ (140)
اکھری گیانُ گیت گنُ گاہ            اکھری لَکھنُ بولنُ بانُ (141)
اکھر اَسر (142) سنجوگ وُکھان

جِن (143) ایہ لِکھے تسُ سر ناہ       جوِ (144) فرمائے توِ توِ (145) پاہِ (146)
جے تا کی تا تے تا ناؤ            وِن ناوے ناہی کو تھاؤ (147)
کدُرتِ کوَن کہا وی چار       داریا نَ جاوا اک وار
جو تدھ بھاوے سائی بھلی کار           تو سدا سلامت نِرنکار۔ =19
بھری اے (148) ہتھُ پَیر تنُ دیہہ (149)         پانی دھوتے اُترسُ کھیہہ (150)
مُوت (151) پلیتی کپَڑ ہوءِ         وے صابُونُ لئی اَے اوَہ دھوءِِ
بھری اَے مَتِ پاپا (152) کے سنگِ           اوہ دھوپے ناوے (153) کے رنگ
پُنی (154) پاپی آکھنُ ناہِ            کر کِر کرنا لِکھ لےَ جاہ
آپے بیج آپے ہی کھاہُ             نانک حُکمی آوہُ جاہ۔ =20
تیرتھُ تپ دِئیا وَت (155) دانُ             جے کو پاوے تِل کا مانُ(156)
سُنیا مَیا منَ کیتا بھاؤ (157)             اَنتر گتِ (158) تیرتھ مل ناؤ
سَبھِ گنِ تیرے مَے نا ہی کوءِ            وِنُ گنُ کیتے بھگتِ نَ ہوءِِ
سُ است (159) آتھِ (160) بانی برماؤ (161)              سَتِ (162)سُہان (163) سدا منِ (164) چاؤ

کَ ونُ (165) سَ ویِلا وکھتُ (166) کون کون تھِت کونَ وارُ
کَ وَنُ س رُتی ماہُ کوَن جِت (167)ہو آ آکار(168)
ویل (169) نَ پائیا پنڈتی ج ہووے لیکھ پُرانُ
وکھت نَ پائیو کادِی آ (170) ج لکھَن قرآنُ

تھِت وارَ جوگی جانےَ ، رت ماہُ نا کوئی              جا کرتا سِرٹھی (171) کو ساجے آپے جانے سوئی
کوکرِ آکھا کوِ صالاحی کؤ (173) ورنی کوِ جانا           نانک آکھِ سبھُ کو آکھے (174) اِک دو اِک سَیانا


وڈا صاحِب وڈی نائی کیتا جا کا ہووَے               نانک جے کو آپو جانَے اگے گیانَ سوہَے ۔ =21
پا تالا پاتال لکھ (175) آگاسا (176) اگاس            اوڑک اوڑک بھال تھکے وَید کہن اِک وات
سَہسَ اٹھاراہ (177) کہن کیتبا (178) اصلواک (179) دھاتَ            لیکھا ہوءِ تَ لکھی اَے لیکھے ہوءِ وِناس(180)

نانک وڈا آکھی اے آپے جانَے آپُ ۔ =22

صالاحی (181) صالاحِ (182) ۔ ایتی سرتِ نَ پائیا۔        ندیاں اتے واہ (184) پَوہ سَمنَد نَ جانی آہِ
سمنَد ساہ سُلطان گِرہا(185) سے تی مالُ دھن              کیڑی تل (186) ناہوونی جے تسَ مُنہُ نَ وِیسرَہ (187) ۔ 23
انتَ نَ صَفتی کہن نَ انتُ             انتُ نَ کرنے دین نَ انت
اَنتُ نَ ویکھن سنن نَ انت            انت نَ جاپَے کیا من منتُ (188)
اَنتُ نَ جاپےَ کیتا آکارُ            انتُ نَ جاپَے پارا وارُ
انتُ کارن کے تے بل لاہ (189)           تاکے انت نَ پائے جاہ
ایہہُ انتُ نَ جانے کوءِ           بُہتا (190) کہی اَے بُہتا ہوءِِ
وڈا صاحبُ اُوچا تھاؤ           اُوچے اُپر اُوچا ناؤ
اے وُڈ (191) اُوچا ہووے کوءِ          تِس اُوچے کو جانے سوءِِ
جے وَڈ آپ جانَے آپِ آپِ          نانک ندری (192) کرمی دات ۔ =25
بُہتا کرمُ لکھیا نا جاءِ          وڈا داتِلُ نَ (193) تماءِِ
کے تے مَہنگہہ جودھ (194) اَپار           کے تیا گنت (195) نہی وی چارُ
کے تے کھپ تُٹہہ (196) وے کار (197)                 کے تے لےَ لےَ مکرُ(198) پاہِ
کے تے مُورکھ کھا ہی کھاہِ           کے تِیا (199)دوکھ بُھوکھ سدمار
اِہ بھِ دات تیری داتار            بَند کھلاسی(200) بھانَے(201) ہوءِ

ہورُ آکھ (202)نَ سکے کوءِ         جے کو کھائکُ (203) آکھن پاءِِ
اوہ جانے جے تی آ (204)مُہہ کھاء            (205) آپے جانے آپے دے ءِِ
آکھہہ سِ بھِ (206 )کے ءِ کے ءِ           جس نوں بکھسے (207)صفت صالاح
نانک پاتساہی (208)پاتساہ ۔ =25
املُ (209)گن (210)امل (211)واپار           امل واپاری اَے امل بھنڈار (212)
امل آوہ (213)امل لے جاہ            امل بھاءِ (214)اَمُلا سماہ (215)
امُل دھرم امل دی بان (216)            امل تل (217)امل پروان (218)
امل بکھسیس (219 )امل نیسان            (220)امل کرم امل فرمانُ
املو امل آکھیا نا جاءِ           آکھ آکھ رہے لو لاءِ
آکھِہہ وید پاٹھ پران          آکِھہہ پڑے کوہ وکھیان
آکھِہہ برمے آکھہہ اِند          آکھہہ گوپی تے گووند
آکھہہ ایسر آکھہہ سِدھ              آکھہہ کے تے کیتے بَدھ
آکھہہ دانو (221)آکھِہہ (222) دیو           آکھہہ سر (223)نر منُ (224)جن سیو
کے تے آکھِہہ آکھن (225)پاہِ            کے تے کہہِ کِہہ اُٹھ اُٹھ جاہِ
اے تے (226)کیتے ہور کریہہِ         تا آکھہہ نَ سکہ کے ئی کے ءِِ
جے وَڈُ بھاوَ ے تے وَڈُ ہوءِ         نانک جانَے ساچا ( 227) سوءِِ
جے کو آکھِہہ بولُ وگاڑ (228)           تا لکھِی اَے سِر گا وا را (229)گا وار۔ =26

سو در (230)کیہا (231)گھرُ کیہا جت (232)بہَِ سرب سمالے(233)
واجے ناد اَنیک (234)اسنکھا کے تے واونَ ہارے (235)

کے تے راگ پری (236)سِؤ کہی آن کے تے گاَون ہارے
گاوہِ تہنو پونُ پانی بیسنترَ (237)گاوے راجا دھرم وآرے
گاوہ چت گپت (238)لکھ جانہہ لکھ لکھ دھرم وی چارے
گاوہِ ای سرَ برما دیوی سوہن سدا سوارے
گاوہ اِند اِداسن (239)بیٹھے دیوتیا در (240)نالے
گاوَہ سَدھ سمادھی (241)اَندرِ گاون سادَھ وِچارے
گاون جَتی سَتی سنتو کھی (243)گا وَہِ ویر (244)کرارے(245)
گاون پنڈت پڑنِ رکھی سَر (246)جگُ جگ ویدا نالے
گاوہَِ موہنیا (247)مَنُ موہن سُرگا (248)مچھَ (249)پئالے (250)
گاون رَتن اُپائے (251)تیرے اَٹھ سٹھ (252)تیرتھ نالے
گاوہ جودھ (253)مہابَل سورا گاوہ کھانی چار ے (254)
گاوہ کھنڈ (255)مَنڈلِ ور بَھنڈا کِر کِر رکھے دھارے
سے ئی (256)تدھ نو گاوہ جو تَدھَ بھاونِ رَتے تیرے بھگت رسالے(257)
ہور کے تے (258)گاونِ سے مے چِت نَ آونِ (259)نانک کیاوی چارے
سوئی سوئی سدا سَچُ صاحبُ ساچا ساچی نائی (260)
ہے (261)بھی ہو سی جاءِ نَ جاسی (262)رچناجنِ رچائی (263)
رَنگی رَنگی بھاتی(264)کِر کِر جنسی مائیا جِن اُپائی
کِر کِر وپکھے کیتا اپنا جوِ تسُ د یوڈیائی
جو تس بھاوے سوئی کرسی حکمَ نَ کرنا جائی (265)

سو پاتسائہ (266)ساہا پاتِ صاحب (267)نانک رہن رجائی (268)۔ =27
مُندا (269)سنتو کھ سرم (270) پَت (271)جھولی دھیان کی کرہ ببھوت (273)
کِھنتھا (274)کالُ (275)کُ آری (276)کائیا (277)جَگتِ (278)ڈنڈا پر تیت (279)
آئی (280)پنتھی سَگل جماتی (281)من جِیتَے جگُ(282)جیتَ
آدیسُ (283)تسِےَ آدیسُ آدا نیلُ (284)اَناد (285) اناہِت (286)جگَ جگُ ایکوویسُ (287) =28
َََََبَھگت گیانَ دیا بھنڈارن گھٹ گھت (289)واجہ ناد
آپ ناتھ (290)ناتھی سَبھ جاکی ردھِ سِدھِ اورا (291)سادِ
سنجوگ (292)وجوگَ دور کار چلاوہِ لیکھے آوہِ بھاگ (293)
آدیس ُ تسے آدیس ُآدِ انیل انادِ اناہت جگُ جگُ ایکو ویسُ۔ =29
ایکا مائی جَگت دیائی (294)تن چیلے پروان(295)
اِک (296)سَنساری اِکَ بھنڈاری اِک لائے دِیبانُ
جو تسُ بھاوے (297)تِو ےَ چلاوے جو ہووے پھرمان
اوہ ویکھے اونا ندرِ ( 298)نَ آوے بُہتا ایُہہ وڈانُ (299)
آدیسَ تسبے آدیسُ آدا نیل اناد اناہت جگ جگ ایکو ویس ۔ =30
آسنُ (300)لوءِ (301)لوءِ بَھنڈار            جو کچِھَ پائیا، سُ اَے کاوار(302)
کر کر ویکھےَ سِر جن ہار(303)            نانک سچے کی ساچی کار(304)
آدیس َتسے آدیسُ      آدِ انیل اَنادِ اَناہت
جگَ جگَ ایکوویس۔ =31
اِک دو (305)جیبھو (306)لکھَ ہوہِ لکھ ہووہِ لکھ وِیس (307)
لکھ لکھَ گے ڑا (308)آکھی آہِ ایک نام جگدِیس(309)
ایت (310) راہِ پت (311) پوڑی آ چڑئیے (312) ہوءِ اِکیس (313)
سن گلا (314) آکاس کی کیٹا (315)آئی رِیس
نانک ندری (316) پائی اے کوڑی کوڑے ٹھیس (317) ۔ =32

آکھن جورُ (318) چپے نہ جور           جورُ نَ منگن دین نَ جورُ
جورُ نَ جی ون مرن نہ جورُ           جورُ نَ راج مال (319) من سور(320)
جور نَ سرتی گیان وی چار           جور نَ جگتی (321) چھٹے سنسارُ
جس ہتھ جور کِر ویکھے سوءِ          نانک اتم (322) ینچ نَ کوء ۔ =33
راتی ( 323) رتی تھتی وار          پون پانی اگنی پاتال
تس وِچ دھرتی تھاپ (324) رکھی دھرم سال(325)
تس وِچ جئیہ (326)جگت کے رنگ          تن کے نام انیک (327) انَنُت
کرمی کرمی ہوءِ وی چار         سچاآپ سچا دربار
تتھے سوہن پنچ پروان           ندری کرم پوے نی سان (328)
کچ (329) پکائی اوتھے پاءِ          نانک گیا (330) جاپے جاء ۔ =34
دھرم کھنڈ کا ایہو دھرم           گیان کھنڈ کا آکھہہ کرم
کے تے پَون پانی وے سنتر(331)            کے تے کان(332) مہیس (333)
کے تے برمے (334) گھاڑت گھڑی اِہ             روپ رنگ کے ویس
کے تے آ کرم بھُومی (335) میر (336)              کیتے کیتے دُھو(337 )اُپ دیس (338)
کے تے اند چند سورُ (339)           کے تے کے تے منڈل دیس

کے تے سدھ بدُھ ناتھ           کے تے کے تے دیوی ویس (340)
کے تے دیو دان (341) ومن(342)               کے تے کے تے رتن سَمند (343)
کے تی آ ۔ کھانی (344) کے تی آ ۔ بانی (345) کے تے پات (346) نِرند (347)
کے تی آ۔سرتی (348) سیوک نانک انت نَ انَتُ ۔ =35
گیان کھنڈ مہ گیان پر چنڈُ (349)           تتھَے ناد (350) نبود کوڈ (351) انند
سَرم (352) کھنڈ کی بانی روپ           تتھے گھاڑتِ گھڑی اَے بہت انُوپُ (353)
تاکیا گلاّ (354) کتھیا۔ نا جاہِ             جے کو کہے پچھَے پچھتاءِ (355)
تتھے گھڑی اَے سَرت متِ منِ بدُھ
تتھَے گھڑی اَے سُرا (356) سدھا کی سُدھ ۔ =36

کرم کھنڈ کی بانی جورُ          تتھے ہور نَ کوئی ہورُ
تتھَے جودھ (357) مہابل سور            تن مہ رام رہیا بھرپور
تتَھے سیتو (358) سیتا مَہا (359) ماہ          تا کے روپ نَ کتھنے (360) جاہ
نا اوہ مرہ نَ ٹھاگے (361) جاہِ       جِنکے رام وسیے مَن ماہ
تتھَے بھگت وسہ کے لوء (362)          کرہ انَند سَچا مَن سوءِ
سچ کھنڈ وَسے (363) نرنکار           کرَ کرَ ویکھے ندر (364) نہال
تتھَے کھنڈ منڈل ور بھنڈ           جے کو کتھے تَ اَنت نَ اَنت
تتھَے (365) لوء لوء آکارُ        جِو (366) جِو حکم توِے(367) توِکار
ویکھے وِگسَے (368) کِر وِیچار              نانک کتھنا کرڑا (369) سارُ ۔=37
جَت پاہارا (370) دھیرج سُنیار          آہرن (371) متِ ویُد، ہتھیار

معنے
1۔ ایک وہ جو واحد لا شریک ہے۔ اونکار برہم جوتی، نور اجملا ، ابدی و لا زوال
2۔ اس کا نام حق ہے۔ اوہ یمیشہ قائم و دائم ہے۔
3۔ وہ ہی فاعل مطلق ہے۔ ہر دل میں موجود ہے۔ ایسا بنانے واہ ہے کہ خالی جگہ پر خود کو رکھتا ہے۔
4۔ خوف و خطر سے بالا ہے۔ اس کو خوف ،خطرہ لا حق نہیں ہوتا یا وہ لگاتار ہستی ہے۔
5۔اس کی کسی سے عداوت نہیں۔ کوئی اس کا دشمن نہیں ۔
6۔ اس کی تشکیل زمانہ وہ وقت کی قید سے آزاد ہے۔ اس کا کوئی آغاز نہیں۔ نہ اس کی انتہا ہے
7۔ وہ ماں کے پیٹ میں نہیں آتا۔ وہ تخلیق میں نہیں آتا ۔ وہ لم یلد و لم بولد ہے۔
8۔ وہ روشن بالذات ہے۔
9۔مرشد کی وساطت و بخشش سے معلوم ہوتا ہے، اس کی اپنی ہی مہربانی سے نصیب ہوتا ہے۔
10۔ اس بانی کا خاص نام۔
11۔ تخلیق زمانہ سے پہلے بھی وہ موجود تھا۔ مختلف ادوار میں بھی وہ موجود تھا ۔ موجودہ زمانہ میں بھی وہ موجود ہے۔ اور قیامت کے بعد وہ موجود رہے گا۔
12۔ لاکھوں بار پاک و صاف ہونے سے بھی دل صاف و پاک نہیں ہوتا ۔
13۔ فکر میں محو، فکر ہونے سے اس کا وصل نصیب نہیں ہو سکتا۔
14۔ تینوں عالموں کے انبار بھی بے شک حاصل ہو جائیں گر سنگی پھر بھی دور نہیں ہو سکتی ۔
15۔ لاکھوں قسم کی دانائی و دانشمندی۔
16کس طرح
17۔ محقق
18۔ جھوٹ و کفر کی دیوار کس طرح ٹوٹے ، کس طرح مسمار ہو۔
19۔ انسان کی تقدیر اس کے ساتھ ہے۔
20۔ تخلیق، عالم موجودات
21۔ مخلوقات
22۔ اعلی و ادنی۔
23بخشش ، رحمت
24۔ ولادت و وفات کے چکر میں ، گردش حیات میں
25۔ اپنی ذات کی بابت کوئی کچھ نہ کہے گا۔
26۔ ہمت و استطاعت
27۔ نشان، پروانہ ، سند
28۔ فعال ، اعمال
29۔ مشکل
30۔ بحث و تمحیص
31۔ ساز بناتا ہے۔ تخلیق کرتا ہے۔
32۔ خاک میں ملاتا ہے۔
33۔ لے کر پھر دیتا ہے۔
34۔حاضرا حضور۔ عین سامنے
35۔ کمی ، کھاٹ ، بیان کرنے سے ختم نہیں ہوتا۔
35۔ کرو ڑہا
36۔ خوش ہوتا ہے۔
37۔ بے پرواہ۔
38۔نام۔
39۔ بولی، بھاشا ، زبان
40۔ جس سے
41۔صبح صادق
42۔ کرموں سے افعال کی وجہ سے
43۔ جسم کا جامہ ۔ حیات نصیب ہوتی ہے ۔
44۔ نظر کرم
نجات
45۔ وہ قائم نہیں کیا جا سکتا۔
46۔ نہ بنایا جا سکتا ہے۔
47۔آلائش سے پاک
48۔ اوصاف کا خزانہ
49۔ ڈر، پیار
50۔ ہٹا کر ، دور کر
51۔ گورو کی پاک زبان سے نکلا ہوا کلمہ اصل آواز (الہام ) ہے یہ شکل آواز
52۔ ویدوں کا جزو، بہ شکل علم
53۔ برہما، گورو ہی شِو ، وشنو اور برہما ہے۔
54۔ میں
55۔ بھولے نہ ، مجھے فراموش نہ ہو۔
56۔ غسل کروں
57۔ اچھا لگوں ، پسند آؤں
58 ۔کائنات پیدا کی
59۔ عمر
60۔ دس گناہ
61۔ تعریف و توصیف ، صفت ، ثناء
62۔ نظر کرم ، بخش
63۔ تو کوئی پوچھتا تک نہیں
65۔الزام
66۔ویسا
67 ۔ نظر نہیں آتا، سوچ سمجھ میں نہیں آتا۔
68۔ اس کا نام سننے سے
69۔ فرشتہ ، دیوتا
70۔ زمین کے نیچے کا بیل (جس نے دونوں سینگوں پہ کہتے ہیں زمین کو اٹھا رکھا ہے )
71۔ اثر انداز نہیں ہوتا۔
72۔ خوشی
73۔ شو
74۔ منہ سے تعریف کرتے ہیں۔
75۔ ہندوؤں کے شاستر سمرتی اور وید (دھار لک کتب )
76۔ اڑسٹھ (ہندوؤں کے 69مقدس مقام )
77۔ پڑھ پڑھ کر
78۔ اوصاف کے سمندروں کی تھاہ پالی جاتی ہے۔
79۔ شیخ۔
80۔ قابل گذر
81۔ نا قابل گذر
82۔ حالت
83۔ کاغذ
84۔ تحریر کرنے والا ، محرر ، منشی
85۔بیٹھ کر
86۔ اس کا نام ماننے (دل میں بسانے ) سے تمام عالمات کا پتہ چل جاتا۔
87۔ منہ پر
88۔ چوٹیں ، ضربیں
89۔ ملک الموت
90۔ راستہ پہ
91۔ روک ، رکاوٹ (نہیں پڑتی
92۔ عزت و احترام کے ساتھ
93۔ مارگ ، راستہ
94۔ مذہبی راستہ۔ اس کو ماننے والا تعین شدہ راستوں پر نہیں چلتا۔ اس کا راہ الگ ہوتا ہے۔ وہ فرقہ بندی کا پابند نہیں ہوتا۔
95۔ ساتھ ، اس کا تعلق حق سے ہوتا ہے
96۔ اہل و عیال کی حالت کو بہتر بناتا ہے۔
97۔ گھومنا ، پھرنا
98۔ بھیک مانگنا، خیرا ت لینا
99۔ قبول
100۔ رہنما ، صدر
101۔ درگاہ، خدا کے حضور
102۔ خوبصورت لگتے ہیں ، عزت حاصل کرتے ہیں۔
103۔ اعمال و افعال
104۔ شمار میں نہیں آتے ۔ لا شمار ہیں۔
105۔ گاو نر بیل
106۔ فضل و کرم ، سخاوت و بخشش
107۔ منسلک کر رکھا ہے۔
108۔ بوجھے، سمجھے
109۔ سچ کو حاصل کرنے والا۔ محقق
110۔ کتنا بوجھ ( ہے )
111۔ کس کا زور ہے
112۔ چل رہی قلم، تمام کی تقدیر لکھنے والی ایک بدستور چل رہی قلم ہی ہے
113۔ کتنا
114۔ طاقت ، قدرت
115۔ خوبصورت ، جمیل
116۔ بخش
117۔ اندازہ ، قیاس
118۔ کائنات تفصیل
119۔ بول، حکم تمام کائنات کو خدانے ہی بول سے تعبیر کر دیا (کن فیکن )
120۔ قدرت و طاقت کہاں ہے (مجھ میں )
121۔ کہ بیان کروں
122۔ قربان جاؤں۔
123۔بے شمار
124۔بہادر ، جو انمرد
125۔ لوہا (دشمنوں سے لوہا لیتے ہیں )
126۔ خاموش رہنے والے
127۔ محو رہتے ہیں۔
128۔ حد سے زیادہ جاہل
129۔ حرا مخور ، حرام کی کمائی کھانے والے
130۔ حکم، زور و تشدد جبر سے حکومت کر جاتے ہیں۔
131۔ قتل کرتے ہیں۔
132۔ جھوٹے ، دروغ گو
133۔ بری و گندی خواہشات والے (خواہشات نفسانی میں مبتلا )
134۔ ناپاک اشیاء کھاتے ہیں (غلیظ و سائل سے روزی کماتے ہیں )
135۔ چغلی ونجیلی کا بوجھ ناحق سرپہ اٹھاتے ہیں۔
136۔ مکان ، جگہ
137۔ ناقابل رسا
138۔ طبق
139 ۔ حروف
140۔ صفت، توصیف و ثناء
141۔کلام
142۔ مقدر بھی حروف کے ذریعہ کئے جاتے ہیں ۔
143۔ جس قادر المطلق نے سب کا مقدر لکھا ہے ۔ اس کا اپنا مقدر لکھنے ولا کوئی نہیں ۔ وہ تقدیر سے بالا ہے۔
144۔ جس طرح
145۔ اسی طرح
146۔ حاصل کرتا ہے، اسے نصیب ہوتا ہے۔
147۔ جگہ ، مکان
148۔ آلودہ
149۔ جسم
150۔ متی (تر جاتی ہے ) صاف ، پاک ہو جاتا ہے۔
151۔ پیشاب سے آلودہ
152۔ گناہوں کے ساتھ ، گناہ آلودہ
153۔ خدا کے نام سے ، اس کے ذکر خیر سے
154۔ نیک اور برے افعال
155۔ دیا ہوا، سخاوت و خیرات
156۔ تل برابر عزت و افتخار تھوڑی سی عزت
157۔ پریم ، پیار
158۔ اندرونی دل میں
159۔ وہ خدا (ہی ) ہے سلام
160۔ دنیا (مایا )
161۔ کن کی آواز۔ اسی کن سے یہ دنیا ظہور میں آئی
162۔ حقیقت
163۔ خوبصورت وکھائی دیتا ہے۔ مزین ہے، زیب دیتا ہے
164۔ خوشی ، سرور
165۔ کونسا
166۔ وقت
167۔ جب ، جس وقت
168۔ ظہور پذیر ہوا
169۔ وقت ،موقعہ
170۔ قاضیوں نے
171۔ دنیا ، کائنات
173۔ بیان کروں ، کہوں
174۔ ایک سے ایک بڑھ کر
175۔ بڑا نام
176۔ لکھو کھا آسمان
177۔ اٹھارہ ہزار
178۔ کتب مقدسہ
179۔ اصل میں ایک ہی ہیں
180۔ ختم ہو جاتے ہیں
181۔ قابل صفت و ثناء، خدوند کریم
182۔ صفت کرنا
184۔ نالتے، ندیاں اور نالے سمندر میں بے شک جا گرتے
185۔ پہاڑ وں جتنے، مال و دولت کے انبار
186۔ برابر
187۔ فراموش نہ کر ے جو
188۔ مدعا، مقصد
189۔ زار زار روتے ہیں۔
190۔ زیادہ
191۔ اتنا اونچا
192۔ نظر کرم ، بخشش
193۔ ذرہ بھر بھی (طمع ولالچ نہیں ہے)
194۔ بہادر، جو انمرد
195۔ شمار میں نہیں آتے۔
196۔ ذلیل و خوار ہو کر مر جاتے ہیں۔
197۔بدکار
198۔ مخرف ہو جاتے ہیں
199۔ کئی ایک (دکھ درد اور بھوک سے مرجاتے ہیں)
200۔ نجات، خلاص
201۔ خدا کی مرضی سے ہی (ہوسکتی ہے)
202۔ کہہ نہیں سکتے
203۔ بے وقوف ، فضول بات کرنے والا،ہزال
204۔ جتنی (چوٹیں)
205۔ منہ کی کھاتا ہے
206۔ ایسی بھی (بات کئی کہتے ہیں)
207۔ بخشش کرتا ہے
208۔ باد شاہ ۔
209۔ بیش قیمت، بے بہا
210۔ صفات
211۔ بیو پار
212۔ خزانہ
213۔ آتے ہیں
214۔ الفت ، محبت
215۔ محوو مجذوب
216۔ دیوان
217۔ ترازو، تول
218۔ وزن، پیمانہ
219۔ بخشش، کرم
220۔ پروانہ، سند
221۔راکشش
222۔ دیوتا، فرشتہ
223۔ فرشتہ سیرت
224۔ خد متگار
225۔ کہنے کی کو شش کرتے ہیں
226۔ اتنے بے شمار
227۔ وہی سچا خدا
228۔ دروح گو، بکواس کرنے والا
229۔ جاہلوں کا جاہل ، اجہل، بے وقوف (حد سے زیادہ)
230۔ دروازہ، دربار
231۔ کیسا ہے
232۔ جہاں بیٹھ کر
233۔ سب کی سنبھال و حفاظت کرتا ہے
234۔ بے شمار
235۔ بجانے والا، مغنی
236۔ راگئی سمیت ، بمعہ راگنیوں کے
237۔ اگنی، آگ ، آتش
238۔ دل کی بات لکھنے والے فرشتے جسکو چتر گپت بھی کہتے ہیں۔
239۔ اپنے تخت پر بیٹھے ہوئے، منکر و نکیر
240۔ بمعہ دو سرے دیو تاؤں کے (تیرے درپہ بیٹھے ہوئے)
241۔ استغراق میں، محوو مستغرق
243۔ صابر و صدیق
244۔ بہادر و جو انمرد، شجاعت مند
245۔ سخت، سخت چو ٹ لگانے والے، ہٹھیلے
246۔ رشیوں کے راجہ
247۔ دلکش ، دل آویز، حوریں
248۔ سرگ کی، جنت کی
249۔ اس دنیا کی
250۔ پاتال کی
251تیرے پیدا کئے ہوئے
252۔ اٹھاسٹھ مقدس مقام (ہندوؤں کے )
253۔ بہادر، طاقتور و جو انمرد
254۔ چاروں قسم کے موجودات، انڈوں سے چیرسے پسینہ سے
255۔ دنیا کے حصے، آسمان ، زمین اور پاتال اور برہمنڈ تمام کائنات
256۔ وہی
257۔ عباد ت میں مسرور، زہد کا خط اٹھانے والا
258۔ کتنے ہی
259۔ مجھے یاد نہیں، بے شمار ہی
260۔ نام، جس کا نام سچا ہے۔
261۔ پہلے (ماضی) بھی تھا۔ اب (حال) بھی ہے اور آئندہ (مستقبل ) بھی ہو گا۔
262۔ مٹتا نہیں۔
263۔ جس نے یہ تمام کائنات و مخلوقات پیدا کی ہے۔
264۔ قسم قسم کی، واقع واقف اقسام کئی رنگوں، قسموں او ر جنسوں کی
265۔ کوئیاسے حکم نہیں دے سکتا۔
266۔ باد شاہ
267۔ باد شاہوں کا باد شاہ، شاہ شاہاں، شہنشاہ
268۔ اس کی رضا میں ہی رہنا چاہیے
269۔ مندرا
270۔ محنت ، کو شش ، کام
271۔ عزت، توقیر
273۔خاک، خاکستر
274 ۔ گودڑی ، خرقہ
275۔ موت
276۔ دو شیزہ
277۔ جسم، سریر
278۔ تدبیر، منصوبہ
279۔ مانے، سمجھے، یقین کرے
280۔ جو گیوں کا ایک فرقہ، جو گیوں کے بارہ فر قوں میں سے ایک جو قوت برداشت و رداداری کے لئے مشہور ہے
281۔ سب جماعتوں اور فرقوں کو یکساں سمجھنا
282۔ اپنے نفس (خواہشات نفسانی)قابو پانا دنیا کو تسخیر کرنے کے مترادف ہے۔
283۔ اسلام
284۔ بے داغ، بے لون
285۔ جس کی ابتداء نہیں
286۔ جس کو چوٹ یا ضرب نہیں لگ سکتی
287۔ جو ہمیشہ یکساں رنگ ہیں
289۔ ہر دل میں اس کی دھن اور آواز سنائی دیتی ہے
290۔ مالک ، خداوند
291۔ دو سری قسم کے مزے ہیں
292۔ پیدا ئش و موت،
293۔ ہر ایک کو اپنا مقدر ملتا ہے۔
294۔ کس طرح حاملہ ہوئی۔
295۔ مانے جاتے ہیں۔
296۔ ایک کائنات پیدا کرنے والا برہما، ایک پرورش کرنے والا وشنو اور ایک موت کے احکام صادر کرنے کے لئے دربار منعقد کرنے والا شِو
297۔ جیسے اسے منظور ہے۔ اس طرح کا روبار چلاتا ہے۔
298۔ نظر نہیں آتا۔
299۔ تعجب تو یہ ہے، عجیب بات تو یہ ہے
300۔ مقام ، تکیہ ، تخت
301۔ ہر طبقت میں
302۔ ایک ہی دفعہ خدا وند کریم نے تمام طبق اور خزانے بھر دیے ہیں ۔
303۔ بنانے والا، خالق
304۔ سچی کاریگری، اس کی تخلیق بھی سچی ہے۔
305۔ ایک سے
306۔ زبان، ایک زبان سے چاہے لاکھوں زبانیں بھی ہو جائیں
307۔ بیس لاکھ (اور چاہے لاکھوں سے بیس لاکھ بھی بن جائیں)
308۔ چکر گردش ، (پھراس ایک زبان کو لاکھ لاکھ بار چکر دیں )
309۔ جگت کا مالک ، پر ماتما
310۔ اس راستہ پر
311۔ اس خداوند کی سیڑھیاں ہیں
312 ۔ اگر چڑھیں ، چڑھنے سے
313۔ ایک ایشور تک پہنچ جاتے ہیں
314۔باتیں
315۔ کیڑوں کو بھی تقلید کا شوق پیدا ہو جاتا ہے۔
316۔ نظر کرم سے ، بخشش سے
317۔ گپ بازی ، جھوٹ کی جھوٹ بات ہی رہتی ہے۔
318۔ زور ، طاقت
319۔ مالیہ
320۔ فرمان ، شاہی حکم، (حکومت مالیہ اور فرماند ہی زور سے حاصل نہیں ہوتے )
321۔ تدبیر
322۔ اونچ نیچ کوئی نہیں
323۔ رات ، موسم ، تھت اور دن
324۔ قائم کر رکھی ہے۔
325۔ نیکی کمانے کی جگہ، دنیا
326۔ بنی نوع اقسام
327۔ بے شمار
328۔ پروانہ ، سند
329۔ کچے پکے (ناآزمودہ اور آزمودہ کار ) آزمائش اس کے دربار میں ہوتی ہے۔
330۔ وہاں جا کر اور پہنچنے سے (ہی ایسا پتہ چلتا ہے )
331۔ آگ ، آتش
332۔ کاہن ، کرشن
333۔شِو ، مہیشور
334۔ برہما (دنیا کو پیدا کرنے والے )
335۔ زمین
336۔ پہاڑ ،پربت
337۔ دھرو بھگت ، قطب
338۔ چھوٹی نگری ، چھوٹا دیس
339۔ اندر، چاند اور سورج
340۔ اشکال ، دیویوں کے بھی کئی روپ ہیں، جیسے لکشمی ، بھگوتی، کالی ، چنڈی وغیرہ
341۔دانو، را کشس
342۔ رشی منی
343۔ موتیوں سے بھرے سمندر
344۔ عالم موجودات وغیرہ
345۔ کلام اور زبانیں
346۔ پادشاہ
347۔ راجے
348۔ وید، شاستر سمرتی
349۔ آگ کی طرح روشن
350۔ الہامی آوزایں تماشے اور سکھوں کی مسرتیں ، راحتیں
351۔ کروڑوں ہی
352۔ محنت و مشقت
353۔ عجیب و غریب
354۔ باتیں کہی نہیں جا سکتیں
355۔ بعد میں پچھتاتا ہے، کف افسوس ملتا ہے۔
356۔ فرشتہ سیرت لوگوں اور مکمل انسانوں کے ہوش و حواس
357۔ بہادر، طاقتور اور جو انمرد
358۔ نیک عورت ، متحمل مزاج لوگ
359۔ صنعت و ثناء میں مشغول میں مصروف ہیں۔
360۔ بیان نہیں کئے جا سکتے
361۔ ان کو کوئی چکمہ یا جل نہیں دے سکتا۔ وہ کسی کے دام فریب میں گرفتار نہیں ہوتے۔
362۔ کئی طبقوں کے
363۔ رہتا ہے
364۔ نظر کرم کرتا ہے۔
365۔ نورانی اجسام
366۔ جیسے جیسے
367۔ تیسے ہی، اسی طرح داسی کے حکم سے دنیا کا کاروبار چلتا ہے )
368۔ کوش ہوتا ہے۔ مسرور و محظوظ ہوتا ہے۔
369۔ لوہے کی طرح سخت جانکاہی کا کام ہے۔ اس کو بیان کر
370۔ سنسار کی بھٹی
371۔ اہرن، جس پر سونے کو کوٹتے ہیں۔














Depacco.com


 

 

Your Name:
Your E-mail:
Subject:
Comments:


Support Wichaar

Subscribe to our mailing list
نجم حسین سیّد
پروفیسر سعید بُھٹا
ناول
کہانیاں
زبان

 

Site Best Viewd at 1024x768 Pixels