Punjabi Wichaar
کلاسک
وچار پڑھن لئی فونٹ ڈاؤن لوڈ کرو Preview Chanel
    


مُڈھلا ورقہ >> شاہ مُکھی وچار >> کلاسک >> نانک بانی >> کلام نانک >> کلام نانک 2

کلام نانک 2

گرو نانک
September 14th, 2008

بھَو (1) کھلا( 2) اَگنَ (3) تپ(4) تاؤ            بھانڈا (5)بھاؤ انَمرت تتُ ڈھال (6)
گھڑی اے (7) سَبد (8) سچی ٹکسال           جِن کو ندِر (9) کرم تِن کار (10)

نانک نَدرِی ندرِ نہال ۔ =38

پَوَن (11) گروُ پانی پِتا ماتا دھرت مَہَت (12)
دوسُ (13) رات دوء (14) دائی دائیا کھیلے سگل جگتُ (15)

چنگیائیا (16) بُریائیا (17) واچے (18) دھرم ہدُور(19)               کرَمی آپو آپ نی کے نیڑے (20) کے دُور
جِنی نامُ دھیائیا گئے مَسکَت (21) گھال            نانک تُے مکھ اُوجلے (22) کے تی چُھٹی (23) نال ۔ =1

سودر (24) راگ آسا محلا 1

اک اونکا ست گرُ پرساد

سو دُر (25) تیرا کیہا(26) سو گھُر کیہا جت (27) بَہہ سرب سمالے
واجے (28) تیرے ناد انیک اَسنکھا (29) کیتے تیرے وَاون ہارے(30)
کے تے تیرے راگ پَری سئیو کہی اَہِ کے تے تیرے گاؤن ہارے
گاون تُدھ نُو پَوَن پانی بے سنتُر گاوے راجا دھرمُ دُآرے
گاونِ تُدھ نُو چتُ گپُت لکَھ جاننِ لکھ لکھ دھرمُ (31) بی چارے
گاونِ تُدھ نُو اِیسرُ برہما دیوی سوہن تیرے سدا سوارے
گاونِ تُدھ نُو اِندرَ اندراسنِ بیٹھے دِیوتیا درنالے (32)
گاوَن تُدھ نُو سِدھ سمادھی اَندرِ گاونِ تُدھ نُوں سادھ بی چارے
گاوَن تَدھ نُو جتَی سَتی سنتو کھی گاونِ نُو وِیر (33) کرارے(34)
گاون تُدھ نُو پنڈت پڑن رکھی سر (35) جُگ جُگُ ویدا (36) نالے
گاونِِ تُدھ نُو موہنیا (37) مَن موہن (38) سرگ مچھ پیالے(39)
گاون تُدھ نُو رتنَ اپائے(40) تیرے اَٹھ سَٹھ (41) تِیرتھ نالے
گاون تُدھ نُو جودھ مہابل سُورا (42) گاون تُدھ نُو کھانی چارے (43)
گاون تُدھ نُو کھنڈ (44) منڈل برہمنڈا کر کر رکھے تیرے دھارے (45)
سے ئی(46) تُدھ نُو گاون جو تُدھ بھاون رتے تیرے بھگت رسالے(47)
ہور کے تے (48) تُدھ نُو گاون سے مے چت (49) نَ آونِ نانک کیابی چارے (50)
سوئی (51) سوئی سَدا سَچُ صاحب ساچا ساچی نائی (52)
ہے بھی ہوسی (53) جاءِ نَ جاسی (54) رَچنا (55) جَن رَچائی
رَنگی (56) رَنگی بھاتی کر کر جِن سی (57) مائیا جِن اُپائی
کرِ کرِ (58) دیکھے کی تا (59) آپ نا (60) جِئیو تِس وی وڈِ آئی
جو تسُ بھاوے سوئی کرسی (61) پھرِ حُکم (62) نَ کرنا جائی
سو پاتساہُ (63) ساہا پَتِ صاحِبُ نانک رَہنُ رجائی (64) ۔ =1

آسا مَحلا پہلا۔ 1
سُن (66) وڈا آکھے سَبھ (67) کوءِ             کے وَڈُ ڈِیٹھا (68) ہوءِ
قیمت ( 69) پاءِ نَ کہیَا (70) جاءِ          کہنے والے تیرے رَہے سَماء (71) ۔ =1
وڈے میرے صاحبِا (72) گہر گھنبِیرا(73)گُنی گہیرا (74)            کوءِ نَ (75) جانَے تیراکے تا (76) کے وڈ (77) چیرا (78)
1 ۔ رہاؤ۔

سبَھ سُرتی مِل سُرت (79) سمائی           سبھِ قیمتِ مِل قیمت پائی
گیانی دھیانی گرُ گرُپائی (80)            کہن نَ جائی (81) تیری تلُ (82) وَڈِ آئی۔2=
سبھِ ست (83) سبھِ تپ سبھ چنگیائیا(84)               سدھا (85) پُرکھا کیا۔ (86) وڈِیائیا (87) آ
تُدھ ونُ سدھی کنے ن (88) پائیا             کرمِ ( 89) مِلے (90) ناہی ٹھاکِ رہائیا ۔ =3
آکھنَ والا کِیا وے چارا (91)            صفتی بھرے تیرے بھنڈارا
جِسُ تُو دیہہ تَِسے کیا چارا (92)            نانک سَچ سوارن ہارا۔4۔ =2

آسا مَحلا۔ 1

آکھاں جیوا (93) وِسرے (94) مَر جاؤ          (95) آکھنَ اُؤکھا (96) ساچا ناؤ
ساچے نامَ کی لاگے (97) بھُوکھ            اُت (98) بھُوکھے کھاءِ چلی آہِ (99) دُوکھ ۔1
سو کؤ (100) وِسرے میری ماءِ            ساچا صاحبُ ساچے ناء ۔ 1۔ رہاؤ
ساچے نام کی تِل وڈیائی          آکھِ تھکے قِیمت نہی پائی
جے سبَھ مل کے آکھن ُ (101) پاہِ           وڈا نَ (102) ہووے گھاٹ نَ جاء ۔ =2
نَ اوہ مَرے نَ ہووے سوگ          دیدا رَہے نَ چُوکے (103) بھوگُ
گنَ ایہو (104) ہور ناہی کوءِ            نا کو ہو آ (105) نا کو ہوء =3-
جے وَڈَ آپِ تےَ وڈ تیری دات (106)         جِن دِنُ کر کے کِیتی (107) رات
کھسَمُُ (108) وِسارِہ (109) تے کمَ جاتِ (110)             نانکُ ناوَے باجھُ سناتِ (111) ۔ 4۔3=
معنے

1۔ ڈر
2۔ کھلڑی ، دکھنی
3۔ آگ ، اگنی
4 ۔ زہد و عبادت کی تپس
5۔ عشق و محبت کا برتن ، پریم کی کٹھالی
6۔ ڈال
7۔ بنایا جاتا ہے ۔
8۔ کلام
9۔ نظر کرم ، مہربانی و بخشش
10۔ کام ، محنت کا کام
11۔ ہوا، سانس
12۔ بڑی ، عظیم
13۔ دن اور رات
14۔ دونو کھیل کھیلانے والے ہیں، دونوں دایا ہیں
15۔ تمام دنیا
16۔ اچھائیاں ، نیک کام ، نیک صفات
17۔ برائیاں
18۔ دیکھتا ہے
19۔ حضور ، اپنے سامنے
20۔ نزدیک
21۔ مشقت ، محنت کی کمائی
22۔ سرخرو
23۔ کتنے ہی ان کے ساتھ نجات حاصل کر لیتے ہیں
24۔ ایک بانی کا نام، اس میں ایک ہی شبد راگ آسا میں ہے۔
25۔ اس پر ماتما کا دروازہ ، نورانی دربار۔
26۔ کیسا ہے۔
27۔ جہاں بیٹھ کر جس مقام پر بیٹھ کر وہ تمام کی پرورش ہے۔
28۔ بجتے ہیں۔
29۔ بے شمار
30۔ بجانے والے سازندے
31۔ =دھرم راجے بھی سوچتے اور لکھتے ہیں۔
32۔ بمعہ دیوتوں کے تیرے درپہ
33- بہارد، جوانمرد
34۔ مصمم ارادے والے، مستحکم و مضبوط
35۔ کھیر، رشیوں کے ایشر، رشیوں کے سردار اعلی ترین رشی
36۔ ویدوں کے ساتھ ، مقدس کتب سے گائیں ۔
37۔ حسینان ، نازنیناں
38۔ دلکش گرویدہ بنا لینے والی خوبصورت ، دو شیزائیں
39۔ جنت ، زمین اورتحت الثری ، سہ عالم ، جنت یا بہشت کی اس سرزمین کی اور پاتال کی۔
40۔ چودہرتن جو دیوتاؤں اور راکشوں نے شیر سمندر کو بلونے سے پیدا کئے۔
41۔ اڑسٹھ، اٹھاسٹھ
42۔ بہادر
43۔ چہار عالم
44۔ حصہ
45۔ سہارے
46۔ سے ای ، وہی
47۔ تیری عبادت میں محو
48۔ کیتے، کتنے ہی
49۔ نہ (وہ مجھے یاد نہیں )
50۔ سوچے ، خیال کرے
51۔ وہی
52۔ نام ، سچے نام والا
53۔ حال ، ماضی اور مستقبل میں ہمیشہ موجود
54- نہ ماضی میں، نہ حال میں اور نہ آئندہ نیست ہوگا۔ کبھی مٹنے کا نہیں ۔
55۔ تخلیق
56۔ قسم قسم کی، انواع و اقسام کی۔
57۔ جنس جنس کی ، اجناس
58۔ دیکھ بھال کرتا ہے۔ پرورش کرتا ہے۔
59۔ کیتا،اپنا کیا ہوا، اپنی تخلیق
60۔ اپنا، اپنا
61۔ کرے گا
62۔ اس کو احکام صادر نہیں کئے جا سکتے ۔ وہ کسی کے زیر فرمان نہیں۔
63۔ پاتساہ ، وہ بادشاہوں کا بادشاہ ہے، شہ شاہان ہے۔
64 ۔ اس کی رضا میں رہنا ہی واجب ہے۔
65۔ سن کر۔
66۔ سبھ کوئی، ہر ایک ، تمام لوگ
67۔ کتنابڑا
68۔ ڈیٹھا ، دیکھنے میں، دیکھ کر
69۔ قیمت جس کی پائی نہیں جا سکتی ، اس کا جائزہ یا اندازہ نہیں کیا جا سکتا
70۔ بیان نہیں کیا جا سکتا۔ اس کا جائزہ یا اندازہ نہیں کیا جا سکتا۔
71۔ محو ہو جاتے ہیں۔
72۔ گہرا
73- عمیق
74۔ اوصاف کا خزانہ ، کنز الاوصاف، صفات
75۔ کوء نہ ، کوئی نہیں جانتا۔
76۔ کیتا، کتنا
77۔ کتنا بڑا
78۔ کائنات
79۔ شرتی یا وید ، ہندوؤں کی کتب مقدس
80۔ وزن کیا تولا، مایا ، تھاہ پانے کی کوشش کی۔
81۔ نہ کہی نہیں جا سکی۔
82۔ ذرا بھر۔
83۔ تقدیس، پاکیزگی
84۔ نیکی، بڑائی
85۔ کراماتی لوگوں نے
86۔ کہیں ، بیان کیں
87۔ تیری صفات
88۔ کسی نے بھی نہ پائی
89۔ بخشش سے
90۔ نہیں ، کوئی روک نہیں سکتا
91۔ کیا سوچے، کیا چرچا کرے۔
92۔ تدبیر، کوشش
93۔ جیواں ، جیتا ہوں، زندہ رہتا ہوں، اس کے نام کا ذکر کرنے سے ہی میں جیتا ہوں۔
94- بھولنے سے ، فراموش کرنے سے
95۔ میں مر جاتا ہوں
96۔ مشکل ، دشوار
97۔ لگتی ہے۔
98۔ اس بھوک کے لگنے سے
99۔ دور ہو جاتے ہیں تمام آلام و تکالیف
100۔ کیوں
101۔ کہنے لگیں
102۔ بڑا نہیں ہوتا ، اور نہ کم ہوتا ہے۔ ہمارے کہنے سے اس پر کوئی اثر نہیں پڑتا ۔ نہ اس طرح وہ بڑا ہوتا ہے نہ چھوٹا۔
103۔ ختم نہیں ہوتے ، وہ بخشش کرتا رہتا ہے پھر بھی اشیاء خوردنی ختم نہیں ہوتیں۔
104۔ ایہو، یہی اس کی صفت یہی ہے کہ اس کے بغیر دوسرا کوئی نہیں ہوگا۔
105۔ اس کے بغیر اور کوئی پہلے بھی نہ تھا اور آئندہ بھی کوئی نہیں ہوگا۔
106 ۔ بخشش ، سخاوت
107۔ کیتی ، کی بنائی
108۔ خصم ، مالک ، خداوند
109۔ فراموش کرتے ہیں ، جو
110۔ کم ذات، بد ذات
111۔ نیچ ، کمینہ ، بے حیا




Depacco.com


 

 

Your Name:
Your E-mail:
Subject:
Comments:


Support Wichaar

Subscribe to our mailing list
نجم حسین سیّد
پروفیسر سعید بُھٹا
ناول
کہانیاں
زبان

 

Site Best Viewd at 1024x768 Pixels